سوات(سوات پوسٹ ڈاٹ کام)کمیونٹی ڈریون لوکل ڈویلپمنٹ(سی ڈی ایل ڈی) کا ادارہ سوات میں آفات سے متاثرہ انفراسٹرکچر کی بحالی کیلئے قائم کیا گیا ہے یہ حکومت اور عوام کے درمیان پل کا کردار ادا کررہا ہے یہ عوام اور مقامی انتظامیہ کے درمیان فاصلے ختم کرکے انہیں ایک پلیٹ فارم پر لانے میں بڑا مددگار ثابت ہوا ہے تاکہ کمیونٹی کے مسائل پوری خوش اسلوبی سے حل ہوں ا ن خیالات کا اظہار سی ڈی ایل ڈی کے کوآرڈینیٹر انجینئر عمرسہیل نے پختونخوا ریڈیو سوات سنٹر کے پروگرام ’’د سوات رنگونہ‘‘ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ سی ڈی ایل ڈی اپنے دائرہ کار کے تمام علاقوں میں سڑکوں، تعلیم و صحت، آبنوشی، ایریگیشن چینل اور گلی کوچوں کے ترقیاتی سکیموں پر کام کررہا ہے ادارے نے سوات بھرمیں اب تک 959 ترقیاتی منصوبوں پر کام شروع کیا جس میں 567 مکمل ہوچکے ہیں اور باقی پر کام تیزی سے جاری ہے ہمارے کام میں مقامی لوگوں کی شمولیت لازمی ہوتی ہے اس لحاظ سے ترقیاتی سکیموں پر لاگت کا دس فیصد مقامی کمیونٹی کا فراہم کردہ ہوتا ہے اور یہ اس لئے کہ کمیونٹی کو ان ترقیاتی سکیموں کی ملکیت کا احساس ہو اور وہ ان پر نظر رکھیں انہوں نے کہا کہ ہم نے ویلج اور یونین کونسل کی سطح پر سی بی اوز یعنی کمیٹیاں بنائی ہیں جو متعلقہ کونسلوں کی سطح پر ترقیاتی کام کے حوالے سے ہمیں اگاہ کرتی ہیں اور ان پر نظر بھی رکھتی ہیں جبکہ انہی کمیٹیوں کے پاس سکیموں کیلئے درخواستیں بھی جمع ہوتی ہیں یعنی جہاں کے لوگ کام چاہتے ہوں تو ان کی درخواستیں انہی کے ذریعے آتی ہیں انہوں نے کہا کہ ہمارے کام کی باقاعدہ حکومتی سطح پر مانیٹرنگ ہوتی ہے ڈپٹی کمشنر ہمارا چیئر پرسن ہوتا ہے اور ہر ترقیاتی کام کا باقاعدہ چیک اینڈ بیلنس ہوتاہے انہوں نے کہا کہ ترقیاتی سکیموں کیلئے فنڈنگ حکومت خیبر پختونخوا ور یورپین یونین کے ذریعے ہوتی ہے اور انہی کے مشترکہ پروگرام کے تحت نہ صرف سوات بلکہ پورے ملاکنڈ ڈویژن کے اضلاع میں ترقیاتی کام ہورہے ہیں جن میں محکمہ بلدیات براہ راست حصہ دار ہے ہمارا بنیادی مقصد یہ ہے کہ شہریوں کا معیار زندگی بہتر بنے اور حکومت و عوام کے درمیان اعتماد بحال ہو۔