Khabar Pakhtoon Khwa News

خیبر پختونخواہ

September 23 2018 swat-post-calendar-swat-7-political-parties,-supported-by-the-national-party-of-pakistan,-waqar-ahmad-khan

سوات، 7 سیاسی جماعتوں نے عوامی نیشنل پارٹی کے اُمیدوار وقار احمد خان کی حمایت کر دی

hello

سوات ( چیف رپورٹر)سوات کے حلقہ پی کے 7 میں ضمنی الیکشن کے سلسلے میں سوات کے 7 سیاسی جماعتوں نے پاکستان تحریک انصاف کے خلاف مشترکہ اُمیدوار انتخابی میدان میں اُتارنے کا اعلان کرتے ہوئے عوامی نیشنل پارٹی کے اُمیدوار وقار احمد خان کی حمایت کر دی،ضمنی الیکشن فوج کی نگرانی میں کرنے کے بجائے سول انتظامیہ کی نگرانی میں کیا جائے قرارداد بھاری اکثریت سے منظور، اس سلسلے میں شاہ ڈھیرئ میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عوامی نیشنل پارٹی سوات کے صدر شیر شاہ خان ، متحدہ مجلس عمل کے اسحاق زاہد ، حافظ محمد اسرار ، پاکستان مسلم لیگ ن کے عبدالغفور اور عثمان غنی ، پاکستان پیپلز پارٹی کے عرفان خان چٹان ، اقبال حسین بالے ، قومی وطن پارٹی کے فضل رحمان نونو ، پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے خورشید کاکا جی نے کہا کہ الیکشن 2018 میں بد ترین کے بدولت پی ٹی آئی کو جعلی مینڈیٹ دینے کے بعد مخالف سیاسی جماعتوں نے ضمنی الیکشن میں مشترکہ اُمیدوار اُتارنے کا جو فیصلہ کیا ہے ہم اپنی قیادت کے ان فیصلوں کے پابند ہیں اور سوات کے حلقہ پی کے 7 میں عوامی نیشنل پارٹی کے اُمیدوار وقار خان متحدہ اپوزیشن کے مشترکہ اُمیدوار ہونگے اور سات سیاسی جماعتوں کے کارکنان وقار خان کو اپنا ہی اُمیدوار تصور کریں اور ان کے حق میں نہ صرف ووٹ استعمال کرینگے بلکہ ان کیلئے باقاعدہ انتخابی مہم بھی چلائیں گے اور اس طرح سوات کے حلقہ پی کے 3 میں اپوزیشن جماعتیں پاکستان مسلم لیگ ن کے اُمیدوار سردار خان کو سپورٹ کرے گی انہوں نے کہا کہ وقار خان متحدہ اپوزیشن کے مشترکہ اُمیدوار ہیں اور تمام سیاسی جماعتوں کے کارکنوں پر لازم ہے کہ وہ وقار خان کیلئے دن رات ایک کرکے انتخابی مہم چلائیں انہوں نے کہا کہ 14 اکتوبر کو جیت متحدہ اپوزیشن کی ہو گی انہوں نے کہا کہ پی کے 7 میں اپوزیشن اُمیدوار کی کامیابی وقت کا تقاضہ ہے کیونکہ جعلی مینڈیٹ کے ذریعے جو افراد کامیاب ہوئے ہیں وہ سوات کا مقدمہ لڑنے کے اہل نہیں وقار خان صوبائی اسمبلی میں سوات کا مقدمہ بہتر اندا ز میں لڑنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اس موقع پر متحدہ اپوزیشن کے قائدین نے ایک قرارداد کے ذریعے مطالبہ کیا کہ ضمنی الیکشن فوج کی نگرانی میں کرنے کے بجائے سول انتظامیہ کی نگرانی میں کیا جائے قرارداد بھاری اکثریت سے منظور کر لیا گیا ضمنی الیکشن فوج کی نگرانی میں نہ کرنے کیوجہ سے پاک فوج کا ساکھ بھی بحال ہو گا اس موقع پر متحدہ اپوزیشن کے مشترکہ اُمیدوار وقار خان نے کہا کہ میں تمام سیاسی جماعتوں کا مشکور ہوں جنہوں نے مجھ پر اعتماد کرتے ہوئے اپنا اُمیدوار نامزد کیا انہوں نے کہا کہ جس طرح سیاسی جماعتوں نے مجھے اپنا مشترکہ اُمیدوار نامزد کیا ہے میں اُمید رکھتا ہوں کہ ان سیاسی جماعتوں کے کارکن اپنے قیادت کی ہدایت پر میرا بھر پور ساتھ دینگے پریس کانفرنس سے عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری خان نواب ، ابراہیم دیولئی نے بھی خطاب کیا جبکہ اس موقع پر اے این پی کے ضلعی ترجمان عبداللہ یوسفزئ ، سابق اُمیدوار قومی اسمبلی عبدالکریم خان اور دیگر سیاسی جماعتوں اور اے این پی کے عہدیداران اور پارٹی کارکنان بڑی تعداد میں موجود تھے ۔