Khabar Pakhtoon Khwa News

خیبر پختونخواہ

January 10 2019 swat-post-calendar-mata-arrested-accused-of-killing-a-private-banks-employer,-dpo-swat

مٹہ، نجی بینک کے ملازمہ کو قتل کرنیوالے ملزم گرفتار،ڈی پی اُو سوات

hello

سوات (سوات پوسٹ ڈاٹ کام )گزشتہ روز مٹہ کے علاقہ اشاڑے جلالہ میں نالے سے بوری بند لاش برآمد ہوئی تھی،پولیس نے لاش تحویل میں لیکرکاروائی کرتے ہوئے ملزمان کو گرفتار کیا۔تفصیلات کے مطابق :مورخہ07-01-2019 کوڈی ایس پی مٹہ اکبر شنواری کو اطلاع ملی کہ مٹہ کے علاقے اشاڑے جلالہ میں خشک نالے میں ایک بوری بند نامعلوم لاش پڑی ہے۔ڈی ایس مٹہ کے ہدایت پر ایس ایچ او مٹہ بخت زادہ نے فوراََ مو قع پر پہنچ کر لاش کو تحویل میں لیتے ہوئے پوسٹ مارٹم کے لئے روانہ کیا اور زیردفعہ302برخلاف ملزمان نامعلوم تھانہ مٹہ میں ایف آئی آر درج کی ۔ ابتدائی تفتیش کے دوران پولیس نے بذریعہ سوشل میڈیا اشتہار شیئر کیا ، جس پر لاش کی شناخت لواحقین نے حناء ولد خان زادہ سکنہ شور ملابابا کے نام سے کردی ۔ ضلعی پولیس آفیسر سید اشفاق انور نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے بلائینڈ مرڈر کو ٹارگٹ کے طور پر اور حساس سمجھ کر ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کرنے کا حکم دیا۔ جس پر ایس پی آپر سوات مشتاق احمد کی زیر نگرانی ایک تفشیشی ٹیم تشکیل دی گئی، جس کی سربراہی ڈی ایس پی مٹہ اکبر شنواری، ایس ایچ اُو مٹہ بخت زادہ اور Oiiکرم خان کو سونپ دی گئی ۔ تفتیش کے دوران پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے مقتولہ کی ذاتی صندوق سے ایک نکاح نامہ دستاویز حاصل کی جس میں مقتولہ کا نکاح دو مہینے پہلے عطاء اللہ ولد سلیم سکنہ شگئی مدین جو کہ پولیس اہلکار اور تھانہ مدین میں تعینات تھا سے ہوئی تھی ۔انٹاروگیشن کے دوران مذکورہ پولیس اہلکار نے کئی اہم انکشافات کئے لیکن وہ پہلے اپنے نکاح سے انکاری تھا لیکن بعد میں دستاویزات پیش کرنے پر مذکورہ پولیس کنسٹیبل نے اعتراف کرتے ہوئے قتل شدہ لڑکی کو اپنا نکاح شدہ بیوی تسلیم کیا۔انٹاروگیشن کے کچھ دیر بعد مذکورہ کانسٹیبل عطاء اللہ ولد محمد سلیم نے اپنے سرکاری رائفل سے اپنے آپ پر فائرنگ کرکہ خو د کشی کی کو شش بھی کی۔جس سے وہ شدید زخمی ہو کر اب لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاور میں زیر علاج ہے۔ مزید تفشیش کے دورا ن نکا ح نامہ میں موجو د دو گواہان پر چھاپہ زنی کر کے دونو ں کو گرفتار کر نے کے بعد ان سے قتل میں استعما ل ہو نی والی کا لے رنگ کی فیلڈر گاڑی بھی بر آمد کی گئی۔دوران انٹاروگیشن ملزمان نے اعتراف جرم کر تے ہو ئے قتل کا سارا واقعہ پولیس کے سامنے بیا ن کیا ۔قتل میں استعمال شدہ فیلڈر گاڑی کے سیٹ سے فائر شدہ گولی بھی بر آمد ہو ئی۔